Evolution of Smoking- URDU

(Last Updated On: May 29, 2016)

 

Smoking the killer

Smoking a known curse

یورپ کی دریافت کے فوراً بعددنیا کے تمام خطوں میں تمباکو نوشی ، اس کی پیداوار اور تجارت پھیل گئی۔ اس کی رفتار اتنی زیادہ تھی کہ دنیا کی تمام بڑی تہذیبوں میں یہ لعنت پھیل چکی تھی۔

فرانس میں 1560 میں ایک فرانسیسی جس کا  نام جِین نکوٹ تھا نے تمباکو روشناس کرایا جس کے نام سے نکوٹین رکھا گیا۔فرانس سے یہ انگلینڈ میں منتقل ہوئی۔انگلینڈ میں پہلی بار ایک انگلش ناخُدا کو 1556 میں برسٹل کے ساحل پر اپنے نتھنوں سے دھواں نکالتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔چائے، کافی اور افیم کی طرح تمباکو بھی ایک نشہ آور دوا کے طور پر استعمال ہوتا آیا ہے۔

مڈل ایسٹ میں تمباکونوشی کی آمد سے پہلے بھنگ نوشی عام اور سماجی رسم تھی اور حقہ کے طور پر استعمال ہوتی تھی۔ایک پائپ میں ایک سے زیادہ ٹیوبز نکل رہی ہوتی تھیں اور ایک سے زیادہ لوگ اس حقے کو بیک وقت استعمال کرتے تھے۔یہاں تک کہ کچھ علاقوں میں پانی کے کنکشن کی طرح حقے کے بھی کنکشن ہوتے تھے۔اور اس بڑےپیمانے کی سہولیات بغداد اور قائرہ میں عام تھیں۔تمباکو کی دریافت کے بعد تمباکو نوشی مسلم سوسائٹی اور ثقافت کا اتنا اہم جزو بن گئی تھی کہ مسلمانوں کی بڑی روایات مثلاً شادی بیاہ اور فوتیدگی کواس عمل کےبغیر ادھورا سمجھا جاتا تھا۔یہ امر اُن کی تعمیرات، بودوباش، رہن سہن،لٹریچر اور ان کی شاعری میں حصہ بنا چکا تھا۔جو کہ 1536 میں فارسی شاعر کی شاعری سے واضح ہوتا ہے۔

اس کے بعد سب سے مستندسموکر1617 میں  ایک سپین کا سفیر تھا مگر اس وقت یہ مشق اس معاشرے میں کافی گہری جڑیں پکڑ چکی تھی۔حقے کے خالق انڈین تھے  ، تاہم یہ ایک اچھی حالت میں نہ ہوتا تھا جس کو ایرانیوں اور افغانیوں نے ایک بہترین شکل میں ڈھالا تھا۔

اُس دور میں امیروں اور غریبوں کی امتیاز تمباکو نوشی کی مدد سے بھی کی جاتی تھی۔اُمراء شیشے اور قیمتی دھاتوں کا استعمال کرتے تھے جبکہ غُرباء ناریل استعمال کرتے تھے جن کے پائپ بانس یا گنے کے ہوتے تھے۔

بہت سے غیرملکی سیاح اس بات کی نشاندہی کرتے نظر آئے ہیں کہ تمباکو نوشی افغانیوں میں کافی حد تک مقبول ہوچکا تھا۔ رمضان میں مسلمان روزہ کھلنے کے فوراً بعد پہلا کام اپنے پائپ سلگا لیتے تھے۔اُن کی عورتیں بھی اس عمل میں پیچھے نہیں رہتی تھیں۔کچھ ہی عرصے بعد ایران اس خطے کا سب سےبڑا تمباکو درآمد کرنے والاملک بن گیا تھا۔امریکی کی دریافت کے بعد امریکا بھی تمباکو نوشی سے نہ بچ سکا اور تمباکو نوشی امریکا میں سرایت کر گئی اور اسی طرح افریقا اور انڈیا کا خطہ بھی اس کی زد میں آگیا۔

تاہم اتنے بڑے پیمانے پر تمباکو نوشی کا یہ مطلب نہیں کہ تمباکو نوشی مُضرِ صحت نہیں ہے۔تمباکو نوشی کے اثرات ہم اگلی نشست میں زیرِغور لائیں گے۔

Itsuper Tecnologies

Itsuper Technologies is Pakistan based IT institute that comes with great ideas in order to make awareness of modern world and green Technology

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

%d bloggers like this: